Monday

Bahot Hee Motabir Hoon Mein

Roman Urdu    رومن اردو

Bahot Hee Motabir Hoon Mein
Bahot Manoos Hain Mujh Sey
Parinday Uss Ki Nagri Kay
Mujhey Tanha Nahien Kartey
Yeh Jugnoon Uss Ki Basti Kay
Hawain Paas Se Jatey Huey
Uss Kaa Batati Hain

Keh Khushbu Rah Mein Rukk Karr
Sirf  Uss Kay Taqqaduss Mein
Bari Hee Ehtraman Jhukk Kay Chalti Hai
Baharein Merey Raston Mein
Kabhi Thehrra Nahien Kartein
Khazzan Rutt Merey Paon Kay Tallay Aaa Kar
Bichha Daiti Hai Ekk Chadar
Shikasta Zard Paton Ki
Guzzartey Jaa Rahey Lamhey Mujhey Badlla Nahin Kartey
Meri Aankhon Se Abb Kay Khawab Bhi
Uljha Nahein Saktay
Challey Jatey Hain Khamoshi Se Abb
Nazrein Jhukka Kay Hum
Kissi Ko Aankh Bhar Kay Bhi Kabhi Daikha Nahin Kartey
Ussey Socha To Kartey Hain
Ussey Mangaa Nahien Kartey
Ussey Manga To Kiya Hogaa
Ussey Chaha To Hai Laikin
Ussey Khoyia Kiya Hogaa
Bahot Hee Sochta Hoon Mein
Sakoot e Shabb Mein Tanhai Mujhey Aa Kar Batati Hai
Tumhein Uss Ki Khawahish Nay Bada Anmol Kar Dala
Woh Mill Jata To Kiya Hota
Chalo Janey Bhi Do
Jo Paas Hai Rakht e Safar Jano
Keh Sadion Chaltey Chaltey Bhi Yahan Se Kuchh No Kam Hogaa
Yeh Jazba Aisa Jazba Hai
Jo Dhundalla Hee Nahin Sakta

Syed Aqeel Shah

Urdu    اردو

بہت ہی معتبر ہوں میں
بہت مانوس ہیں مجھ سے
پرندے اُس کی نگری کے
مجھے تنہا نہیں کرتے
یہ جگنوں اُس کی بستی کے
ہوائیں پاس سے جاتے ہوئے
اُس کا بتاتی ہیں
کہ خوشبو راہ میں رک کر
صرف اُس کے تقدس میں
بڑی ہی احتراماً جھک کے چلتی ہے
بہاریں میرے رستوں میں
کبھی ٹھہرا نہیں کرتیں
خزاں رُت میرے پاؤں کے تلے آ کر
بچھا دیتی ہے اک چادر
شکستہ زرد پتوں کی
گزرتے جا رہے لمحے مجھے بدلا نہیں کرتے
میری آنکھوں سے اب کے خواب بھی
اُلجھا نہیں سکتے
چلے جاتے ہیں خاموشی سے اب
نظریں جھکا کے ہم
کسی کو آنکھ بھر کے بھی کبھی دیکھا نہیں کرتے
اُسے سوچا تو کرتے ہیں
اُسے مانگا نہیں کرتے
اُسے مانگا تو کیا ہوگا
اُسے چاہا تو ہے لیکن
اُسے کھویا کیا ہو گا
بہت ہی سوچتا ہوں میں
سکوتِ شب میں تنہائی مجھے آ کر بتاتی ہے
تمہیں اُس کی خواہش نے بڑا انمول کر ڈالا
وہ مل جاتا تو کیا ہوتا
چلو جانے بھی دو
جو پاس ہے رختِ سفر جانو
کہ صدیوں چلتے چلتے بھی یہاں سے کچھ نہ کم ہو گا
یہ جذبہ ایسا جذبہ ہے
جو دُھندلا ہی نہیں سکتا

سید عقیل شاہ

Baadbaan Khulney Se Pehley Kaa Ishara Daikhna


Roman Urdu     رومن اردو

Baadbaan Khulney Se Pehley Kaa Ishara Daikhna
Mein Sumander Daikhti Hoon, Tum Kinara Daikhna

Youn Bicharna Bhi Bahot Aasaan Naa Thaa Iss Say Magar
Jatey Jatey Uss Ka Woh Murr Kar Dobaraa Daikhna

Kiss Shabbaht Ko Liyey Aaya Hai Chaand
Aaye Shabb e Hijjran ! Zarra Apna Sittara Daikhna

Kiya Qayamat Hai Keh Jin Kay Naam Par Paspa Huey
Innhee Logon Ko Muqaabil Mein Saff e Aara Daikhna

Jabb Banaam e Dill Gawahi Sarr Ki Maangi Jaye
Khoon Mein Dooba Hua Parcham Hamara Daikhna

Jeetney Mein Bhi Jahan Jee Kaa Zayyan Ziyada Hai
Aisee Baazi Harnay Mein Kiya Khassara Daikhna

Aainey Ki Aankh Bhi Kuch Kamm Naa Thee Mere Liyey
Jaaney Abb Kiya Kiya Dikhaie Gaa Tumhara Daikhna

Aik Mushtt Khaak Aor Wo Bhi Hawa Ki Zadd Mein
Zindagi Ki Bay Bassi Kaa Isstaara Daikhna

Parveen Shakir

Urdu    اردو

بادباں کھلنے سے پہلے کا اشارہ دیکھنا
میں سمندر دیکھتی ہوں، تم کنارہ دیکھنا

یوں بچھڑنا بھی بہت آسان نہ تھا اس سے مگر
جاتے جاتے اس کا  وہ مڑ کر دوبارہ دیکھنا

کس شباہت کو لئے آیا ہے چاند
اے شبِ ہجراں! ذرا اپنا ستارہ دیکھنا

کیا قیامت ہے کہ جن کے نام پر پسپا ہوئے
اُن ہی لوگوں کو مقابل میں صفِ آرا ء دیکھا

جب بنامِ دل گواہی سر کی مانگی جائے
خون میں ڈوبا ہوا پرچم ہمارا دیکھنا

جیتنے میں بھی جہاں جی کا زیاں زیادہ ہے
ایسی بازی ہارنے میں کیا خسارہ دیکھنا

آئینے کی آنکھ بھی کچھ کم نہ تھی میرے لئے
جانے اب کیا کیا دیکھائے گا تمہارا دیکھنا

ایک مُشت خاک اور وہ بھی ہوا کی زد میں
زندگی کی بے بسی کا استعارہ دیکھنا

پروین شاکر

Azzal Sey Hai Mohabbat!

Roman Urdu    رومن اردو

Azzal Sey Hai Mohabbat!
Mawaraa Lafzon Ki Maalaa Se
Magar Ye Bhi Haqiqat Hai
Mohabbat Soch Kay Aakaash Par
Badal Ki Surat Mein
Sadda Parwaz Karti Hai

Kabhi Barish Ki Boondon Mein
Simmit Kar Dill Ki Dharti Par
Ootarti Hai, Bikharti Hai
Adda Lay Kar Sabba Se Ye….
Gullabon Se Mehik Laykar
Dhanak Se Rang Laykar
Aor Sittaron Sey Chamak Laykar
Haseein Aanchal Banati Hai
Issi Aanchal Se Phirr Khawabon Kay
Kachay Gharr Sajjati Hai
Mohabbat Aazmati Hai
Kabhi Ye Sher Bankar…
Lafz Ki Hurmatt Barhati Hai
Kabhi Ye Saaz Bankar
Dheerey Dheerey Gungunatti Hai
Sarrapa Aankh Ban Jati Hai
Ye Mahboob Ko Paa Kar….
Anokha Lams Ban Jati Hai
Kooye Yaar Mein Jaakar
Naajaney Konsaa Mantarr!
Ye Parh Kar Holey Holey Se
Kissi Ki Bandd Aankhon Mein
Binna Dastak Diyey Yakkdam!
Ootarr Kay Ghar Banati Hai
Mohabbat Muskarati Hai!!!
Yeh Khushbu Hai..!!
Hamesha Phool Ki Sanson Mein Hoti Hai
Banaday Chaand Jo Terah Shabon Ko!
Aisee Jotti Hai!!
Kassak Hai Daimi Iss Mien!
Bahot Baynaam Lazzat Hai
Mohabbat Ki Yahi Taareef Hai!
Keh Yeh Mohabbat Hai..!!

Fakhira Batool

Urdu    اردو

ازل سے ہے محبت!
ماورا لفظوں کی مالا سے
مگر یہ بھی حقیقت ہے!
محبت سوچ کے آکاش پر۔۔۔۔
بادل کی صورت میں
سدا پرواز کرتی ہے
کبھی بارش کی بوندوں میں
سمٹ کر دل کی دھرتی پر
اترتی ہے، بِکھرتی ہے
ادا لے کر صبا سےیہ۔۔۔۔
گلابوں سے مہک لے کر
دھنک سے رنگ لے کر
اور ستاروں سے چمک لے کر
حسیں آنچل بناتی ہے
اسی آنچل سے پھر خوابوں کے
کچے گھر سجاتی ہے
محبت آزماتی ہے
کبھی یہ شعر بن کر۔۔۔۔
لفظ کی حُرمت بڑھاتی ہے
کبھی یہ ساز بن کر۔۔۔
دھیرے دھیرے گنگناتی ہے
سراپا آنکھ بن جاتی ہے
یہ محبوب کو پا کر۔۔۔
انوکھا لمس بن جاتی ہے
کُوئے یار میں جا کر۔۔۔
نہ جانے کون سا منتر!
یہ پڑھ کر ہولے ہولے سے
کسی کی بند آنکھوں میں
بنا دستک دیئے یکدم!
اُتر کے گھر بناتی ہے
محبت مسکراتی ہے!!!
یہ خوشبو ہے۔۔۔!!
ہمیشہ پھول کی سانسوں میں ہوتی ہے
بنا دے چاند جو تیرہ شبوں کو!
ایسی جوتی ہے!!
کسک ہے دائمی اس میں!
بہت بے نام لذت ہے
محبت کی یہی تعریف ہے!
کہ یہ محبت ہے!!
فاخرہ بتول

Ayye Mohabbat..! Teri Qismat Ke Tujhey Mufftt Mein Milley

Roman Urdu    رومن اردو

Ayye Mohabbat..!
Teri Qismat Ke Tujhey Mufftt Mein Milley Hum Sey Dana
Jo Kamalaat Kia Kartey Thay
Khushk Matti Ko Ammaaraat Kiya Kartey Thay
Ayye Mohabbat..!
Yeh Tera Bakht Ke Binn Mool Milley Humsey Anmool
Jo Heeron Mein Tulla Kartey Thay
Hum Sey Munhzor, Jo Bhoonchaal Uthha Rakhtey Thay
Ayye Mohabbat Merri!

Hum Tere Mujrim Thehrey
Hum Jaisey Jo Logon Se Sawalaat Kia Kartey Thay
Hum Jo Sao Baaton Ki Aik Baat Kiya Kartey Thay
Teri Tehveel Mein Aaney Sey Zarra Pehley Takk
Hum Bhi Iss Sheher Mein Izzat Se Raha Kartey Thay
Hum Bigartey To Kai Kaam Banna Kartey Thay
Aor…!
Abb Teri Sakhawat Kay Ghannay Saaye Talley
Khilqat e Shaher Ko Hum Zindah Tamasha Thehray
Jitney Ilzam Thay
Maqsoom Hamara Thehray
Ayye Mohabbat..!
Zarra Andaz Badal Lay Apna
Tujh Ko Aaindah Bhi Ushaaqq Ka Khoon Peena Hai
Hum To Marr Jaingay, Tujh Ko Magar Jeena Hai
Ayye Mohabbat!
Teri Qismat Ke Tujhey Milley Hum Se Anmol
Hum Sey Danaa…..!

Urdu   اردو

اے محبت!
تیری قسمت کہ تجھے مفت میں ملے ہم سے دانا
جو کمالات کیا کرتے تھے
خشک مٹی کو امارات کیا کرتے تھے
اے محبت!
یہ تیرا بخت کہ بن مول ملے ہم سے انمول
جو ہیروں میں تُلا کرتے تھے
ہم سے منہ زور، جو بھونچال اُٹھا رکھتے تھے
اے محبت میری!
ہم تیرے مجرم ٹھہرے
ہم جیسے جو لوگوں سے سوالات کیا کرتے تھے
ہم جو سو باتوں کی ایک بات کیا کرتے تھے
تیری تحویل میں آنے سے ذرا پہلے تک
ہم بھی اس شہر میں عزت سے رہا کرتے تھے
ہم بگڑتے تو کئی کام بنا کرتے تھے
اور!
اب تیری سخاوت کے گھنے سائے تلے
خلقت شہر کو ہم زندہ تماشہ ٹھہرے
جتنے الزام تھے
مقصوم ہمارا ٹھہرے
اے محبت!
ذرا انداز بدل لے اپنا
تجھ کو آئندہ بھی عشاق کا خون پینا ہے
ہم تو مر جائیں گے، تجھ کو مگر جینا ہے
اے محبت!
تیری قسمت کہ تجھے ملے ہم سے انمول
!ہم سے دانا۔۔۔

Aye Larki Sunno


Roman Urdu  

Aye Larki Sunno
Tumhaari Dil-Rubba Aankhein
Jabb Sharam Se Jhukti Hain
Tumhari Honton Ki Hiddat Se
Tumharay Gaal Ki Laali
Mujhe Sab Kuch Batati Hai

Tumhein Kitni Mohabbat Hai
Tumhein Kiss Ki Zaroorat Hai
Magar Aik Ehsaas Hota Hai
Rishtey Kitney Bhi Sachey Hoon Jana He Muqaddar Hai
Ghari Bhar Kee Mullaqatein Samjho To Ghaneemat Hai

Urdu   اردو

اے لڑکی سنو
تمہاری دلرُبا آنکھیں
جب شرم سے جھکتی ہیں
تمہاری ہونٹوں کی حدت سے
تمہارے گال کی لالی
مجھے سب کچھ بتاتی ہے
تمہیں کس کی ضرورت ہے
مگر ایک احساس ہوتا ہے
رشتے کتنے بھی سچے ہوں جانا ہی مقدر ہے
گھڑی بھر کی ملاقاتیں سمجھو تو غنیمت ہے

Guzarna Teri Galion Se Bahot Achha Saa Lagta Hai

Roman Urdu   رومن اردو

Guzarna Teri Galion Se Bahot Achha Saa Lagta Hai

Arrey Jaanaan Kaha Naan Mein Tumhara Hoon
Qasam Sey Bas Tumhara Hoon
Chalo Abb Chhor Do Larna
Jhagrna Tark Kar Do Naan

Meri Bay Aitbaari Ki Ghalat Fehmi Jhattak Do Naan
Jallana Dill Ka Chhor Do Naan
Suno Jaanaan….!!!
Zarra Saa Muskaro Do Naan
Kaha Naan Mein Tumhara Hoon
Qasam Sey Bass Tumhara Hoon

Hasnain Shami

Urdu   اردو

گزرنا تمہاری گلیوں سے بہت اچھا سا لگتا ہے

ارے جاناں ۔کہا ۔۔ناں۔۔میں تمہارا ہوں
قسم سے بس تمہارا  ہوں
چلو اب چھوڑ دو لڑنا
جھگڑنا ترک کر دو ناں
میری بے اعتباری کی غلط فہمی جھٹک دو ناں
جلانا دل کا چھوڑو ناں
سنو جاناں۔۔۔!!!
ذرا سا مسکرا دو ناں
کہا۔۔ناں۔۔میں تمہارا ہوں
قسم سے بس تمہارا ہوں

حسنین شامی

Apney Iss Dil Pey Hakoomat To Tumhari Hogee

Roman Urdu   رومن اردو

Apney Iss Dil Pey Hakoomat To Tumhari Hogee
Aor Harr Hukkam Pay Ta’ameel Hamari Hogee

Daingay Harr More Parr Ye Ahel e Jahan Jiss Ki Missal
Woh Mohabbat To Zamaney Mein Hamari Hogee

Tod Paye Gaa Koi Bhi Nahien Hargizz Jissko
Apni Aaps Mein Merri Jaan Wo Yaari Hogee

Binn Tumharey Naa Samaye Gaa, Dill O Jaan Mein Koi
Tum Say Bay Lous Wafa, Itni Hamari Hogee

Naam Likha Hai Tumhara Hee Faseel e Dill Par
Aor Sapney Mein Bhi Surrat To Tumhari Hogee

Falak Sher Zaman

Urdu   اردو

اپنے اس دل پہ حکومت تو تمہاری ہو گی
اور ہر حکم پہ تعمیل ہماری ہو گی

دیں گے ہر موڑ پر یہ اہلِ جہاں جس کی مثال
وہ محبت تو زمانے میں ہماری ہو گی

توڑ پائے گا کوئی بھی نہیں ہرگز جس کو
اپنی آپس میں مری جان وہ یاری ہو گی

بِن تمہارے نہ سمائے گا، دل و جاں میں کوئی
تم سے بے لوث وفا، ہماری ہو گی

نام لکھا ہے تمہارا ہی فصیلِ دل پر
اور سپنے میں بھی صورت تو تمہاری ہوگی

فلک شیر زمان

Unwaan Hai Batti Challi Gaie

Roman Urdu    رومن اردو

Unwaan Hai Batti Challi Gaie

Paanch Din Milley Zindagi Kay Maggar
Guzzarrey Thay Abhi Chaar Keh Batti Challi Gaie

Kall WAPDA Kay Daftar Mein Meeting Thee Kuchh Khaas
Honey Lagee Takrar Keh Batti Challi Gai

Mout Kee Tarah Iss Kaa Bhi Waqt Naa Raha
Eid Ki Shopping Aor Bharra Bazar Keh Batti Challi Gaie

School Time Aor WAPDA ki Zahanat
Nashta Honey Lagga Tiyar Keh Batti Challi Gaie

Shaadi Waley Din Badey Khush Thay Hum
Galley Padney Lagay Thay Haar Keh Batti Challi Gaie

Zindagi Rahi Tay Fare Millan Gay
Karna Hai Yeh Message Upload, Warna Mein Keh Bhi Naa Sakonga Yaar Batti Challi Gaie

Urdu   اردو

عنوان ہے "32" چلی گئی

پانچ دن ملے زندگی کے مگر
گزرے تھے ابھی چار کہ  "32" چلی گئی

کل واپڈا کے دفتر میٹنگ تھی کچھ خاص
ہونے لگی تکرار کہ  "32" چلی گئی

موت کی طرح اس کا بھی وقت نہ رہا
عید کی شاپنگ اور بھرا بازار کہ  "32" چلی گئی

سکول ٹائم اور واپڈا کی ذہانت
ناشتہ ہونے لگا تیار کہ  "32" چلی گئی

شادی والے دن بڑے خوش تھے ہم
گلے پڑنے لگے تھے ہار کہ  "32" چلی گئی

زندگی رہی تے فیر مِلاں گے
کرنا ہے یہ میسج اپ لوڈ ورنہ میں کہہ بھی نہ سکوں گا یار "32" چلی گئی 
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...