Friday

Gham Tumhara Nahien Jana


Roman Urdu   رومن اردو

Gham Tumhara Nahien Janan Dukhh Hai Apna
Tum Bichartey Ho To, Hum Khud Se Bicharr Jatey Hain


Urdu   اردو

غم تمہارا نہیں جاناں، دکھ ہے اپنا
تم بچھڑتے ہو تو ہم خود سے بچھڑجاتے ہیں

Hamein Tash'heer Ki Khawahish Nahien


Roman Urdu    رومن اردو

Hamein Tash'heer Kie Khahish Nahin Bass Roshni Kie Hai
Kissi Ko Matt Batana Yeh Diyey Hum Nay Jallaiye Hain


Urdu    اردو

ہمیں تشہیر کی خواہش نہیں بس روشنی کی ہے
کسی کو مت بتانا یہ دیئے ہم نے جلائے ہیں

Do Din Ki Khushi


Roman Urdu   رومن اردو

Do Din Ki Khushi Pey Umer Bharr Ka Rogg
Wah Ree Mohabbat! Teri Sood Khoriyan


Urdu   اردو

دو دن کی خوشی پہ عمر بھر کا روگ
واہ ری محبت تیری سُود خوریاں

Tu Nay Daikha Hee Nahein Manzar

Roman Urdu   رومن اردو

Tu Nay Daikha Hee Nahien Manzar Merei Tanhai Kaa
Ekk Qayamat Hai Jo Harr Shaam Guzzar Jati Hai


Urdu    اردو

تو نے دیکھا ہی نہیں منظر میری تنہائی کا
اک قیامت ہے جو ہر شام گزر جاتی ہے

Mutton / Beef Seekh Kabab Recipe in Urdu

Be ready to make Mutton / Beef Seekh Kabab at Home in easy and simple way, try to make Beef Seekh Kabab in Urdu. No longer time no expensive material is required, just use house hold item to bake Seekh Kabab, lets enjoy to taste BBQ at Home. 

Chicken Fajita Pizza Recipe In Urdu

Be ready to make Chicken Fajita Pizza at Home in easy and simple way, try to make Chicken Fajita Pizza in Urdu. No longer time no expensive material is required, just use house hold item to bake Pizza, lets enjoy to taste Chicken Pizza at Home. 



Wednesday

Baykhudi Ka Bara Sahar Hai


Roman Urdu        رومن اردو

Baykhudi Ka Bara Sahar Hai
Warna Duniya Mein Kiya Hamara Hai
Log Martey Hain Mout Aaney Sey
Hum Ko Iss Zindagi Nay Mara Hai
Aadmi Kuchh Bhi Karr Nahin Sakta
Waqt Aisa Guzzr Nahin Sakta
Waqt Aisa Magar Guzzra Hai
Kitni Halki Hai Kitni Bojhal Hai

Koi Aourat Nahin Yeh Botal Hai
Band Iss Mein Jahan Sara Hai
Iss Muqadar Ka Yeh Sitam Daikho
Doobtey Jaa Rahey Hain Hum Daikho
Aor Woh Saamney Kinarah Hai

Urdu    اردو

بے خودی کا بڑا سہارا ہے
ورنہ دنیا میں کیا ہمارا ہے
لوگ مرتے ہیں موت آنے سے
ہم کو اس زندگی نے مارا ہے
آدمی کچھ بھی کر نہیں سکتا
وقت ایسا گزر نہیں سکتا
وقت ایسا مگر گزرا ہے
کتنی ہلکی ہے کتنی بوجھل ہے
کوئی عورت نہیں یہ بوتل ہے
بند اس میں جہاں سارا ہے
اس مقدر کا یہ ستم دیکھو
ڈوبتے جارہے ہیں ہم دیکھو
اور وہ سامنے کنارہ ہے

Bay Bassi

Roman Urdu      رومن اردو

Bay Bassi
Aik Baar Dasht e Sehra Mein
Aik Phool Khiltey Daikh Kar
Weeran Dil Machal Uthha
Khushk Sehra Aankhon Nay Khawahish Ki
Sard Honton Pey Muskaan Laney Kee
Magar Waqt Kee Bay Mehree Nay

Yaadon Ka Chehra Dikhaa Diya
Waqt Nay Hansna Bhulla Diya
Dil Ko Rona Sikhaa Diya

Dr. Najma Shaheen Khosa

Urdu      اردو

بے بسی
اک بار دشتِ صحرا میں
ایک پھول کھلتے دیکھ کر
ویران دل مچل اُٹھا
خشک صحرا آنکھوں نے خواہش کی
سرد ہونٹوں پہ مسکان لانے کی
مگر وقت کی بے مہری نے
یادوں کا چہرہ دکھا دیا
وقت نے ہنسنا بھلا دیا
دل کو رونا سکھا دیا

ڈاکٹر نجمہ شاہین کھوسہ

Baaton Baton Mein Bicharney Ka Ishaara Karkay


Roman Urdu    رومن اردو

Baaton Baton Mein Bicharney Ka Ishaara Karkay
Khud Bhi Woh Roya Bahot Hum Se Kinaraa Karkay

Sochta Rehta Hoon Tanhai Mein Anjaam e Khaloos
Phir Ussi Jurm e Mohabbat Ko Dobaraa Karkay

Jagmagga Dee Hain Tere Shaher Kee Gallian Mein Nay
Apney Har Ashk Ko Palkon Peh Sittara Karkay

Daikh Letey Hain Challo Housla Apney Dill Kaa
Aor Kuchh Roz Terey Sathh Guzzara Karkay

Urdu    اردو

باتوں باتوں میں بچھڑنے کا اِشارہ کرکے
خُود بھی وہ رویا بہت ہم سے کنارہ کرکے

سوچتا رہتا ہوں تنہائی میں انجامِ خلوص
پھر اُسی جُرمِ محبت کو دوبارہ کرکے

جگمگا دی ہیں تیرے شہر کی گلیاں میں نے
اپنے ہر اشک کو پلکوں پہ ستارہ کرکے

دیکھ لیتے ہیں چلو حوصلہ اپنے دل کا
اور کچھ روز تیرے ساتھ گُزارہ کرکے

Barson Kay Baad Daikha Shakhs Dilrubba Saa


Roman Urdu      رومن اردو

Barson Kay Baad Daikha Shakhs Dilrubba Saa
Abb Zehn Mein Nahien Hai Parr Naam Thaa Dilrubba Saa

Abru Khichey Khichey Say Aankhein Thee Jhukki Jhukki See
Batein Thee Rukki Rukki See Lehja Thaa Thakka Thakka Saa

Alfaaz Thay Jugnu Awaz Kay Safar Mein
Bann Jayey Janglon Mein Jiss Tarah Rasta

Khaabon Mein Khawab Uss Ki Yaadon Mein Yaad Uss Kee
Neindon Mein Ghull Giya Ho Jaisey Kay Ruttjagga Saa

Pehley Bhi Log Aaye Kitney Hee Zindagi Mein
Wo Harr Tarah Sey Laikin Aoron Sey Thaa Judda Saa

Agli Mohabbaton Nay Wo Naa Murradian Dein
Taaza Rafaqton Sey Thaa Dill Darra Darra Saa

Ahmed Faraz

Urdu        اردو

برسوں کے بعد دیکھا شخص دلرُبا سا
اب ذہن میں نہیں ہے پر نام تھا دلرُبا سا

ابرو کھچے کھچے سے آنکھیں تھی جھکی جھکی سی
باتیں تھی رُکی رُکی سی لہجہ تھا تھکا تھکا سا

الفاظ تھے جگنو آواز کے سفر میں
بن جائے جنگلوں میں جس طرح راستہ

خوابوں میں خواب اُس کی یادوں میں یاد اُس کی
نیندوں میں گُھل گیا ہو جیسے کے رُتجگا سا

پہلے بھی لوگ آئے کتنے ہی زندگی میں
وہ ہر طرح سے لیکن اوروں سے تھا جُدا سا

اگلی محبتوں نے وہ نامرادیاں دیں
تازہ رفاقتوں سے تھا دل ڈرا ڈرا سا

احمد فراز

Bada Dushwaar Hota Hai


Roman Urdu            رومن اردو

Bada Dushwaar Hota Hai
Zarra Saa Faisla Karna
Keh Jeewan Kahani Ko
Kahan Se Yaad Rakhna Hai
Kahan Se Bhool Jana Hai
Ussey Kitna Batana Hai
Ussey Kitna Chhuppana Hai

Kahan Ro Ro Keh Hansna Hai
Kahan Hans Hans Keh Hansna Hai
Kahan Aawaaz Daena Hai
Kahan Khamosh Rehna Hai
Kahan Rastta Badlna Hai
Kahan Se Lout Aana Hai
Bada Dushwaar Hota Hai
Zarra Saa Faisla Karna

Urdu        اردو

بڑا دُشوار ہوتا ہے
ذرا سا فیصلہ کرنا
کہ جیون کہانی کو
کہاں سے یاد رکھنا ہے
کہاں سے بھول جانا ہے
اسے کتنا بتانا ہے
اسے کتنا چُھپانا ہے
کہاں رو رو کے ہنسنا ہے
کہاں ہنس ہنس کے رونا ہے
کہاں آواز دینا ہے
کہاں خاموش رہنا ہے
کہاں رستہ بدلنا ہے
کہاں سے لوٹ آنا ہے
بڑا دُشوار ہوتا ہے
ذرا سا فیصلہ کرنا

Barishon Kay Mousam Mein


Roman Urdu      رومن اردو

Barishon Kay Mousam Mein
Waqt Kay Andheron Mein
Mein Nay Uss Se Poocha Thaa
Chhod To Nah Jao Gay.?
Hath Haam Kar Uss Nay
Kaan Mein Yeh Bola Thaa

Kaisey Chhod Sakta Hoon.?
Tum To Jaan Ho Meri
Aor Aaj Aisa Hai…..!!
Waqt Ki Tamaztt Mein
Wehshton Kay Mousam Mein
Mein Nay Uss Se Poocha Hai
Chhod Kar Hee Jana Tha.?
Muskurati Gallion Mein
Aas Kion Dillai Thee..?
Piyas Kion Jaggai Thee..?
Mere In Sawalon Par
Chaltey Chaltey Wo Bola
Mousamon Kay Khail Hain Sab
Jo Badltey Rehtey Hain

Urdu          اردو

بارشوں کے موسم میں
وقت کے اندھیروں میں
میں نے اس سے پوچھا تھا
چھوڑ تو نہ جاؤ گے؟
ہاتھ تھام کر اس نے
کان میں یہ بولا تھا
کیسے چھوڑ سکتا ہوں؟
تم تو جان ہو میری
اور آج ایسا ہے۔۔۔۔!!
وقت کی تمازت میں
وحشتوں کے موسم میں
میں نے اس سے پوچھا ہے
چھوڑ کر ہی جانا تھا؟
مسکراتی گلیوں میں
آس کیوں دلائی تھی؟
پیاس کیوں جگائی تھی؟
میرے ان سوالوں پر
چلتے چلتے وہ بولا
موسموں کے کھیل ہیں سب
جو بدلتے رہتے ہیں

Barishon Kay Mousam Mein


Roman Urdu             رومن اردو

Barishon Kay Mousam Mein
Dill Ki Sarzameenon Peh
Gard Kion Bikharti Hai..?
Iss Barah Kay Mousam Mein
Phool Kion Nahin Khiltey..?

Log Kion Nahin Miltey..?
Kion Faqt Yeh Tanhai
Sath Sath Rehti Hai..?
Kion Bicharney Walon Ki
Yaad Sath Sath Rehti Hai
Itni Tez Barish Sey
Dil Kay Aainey Par Sey
Aks Kion Nahin Dhulltey..?
Zakham Kion Nahin Miltey..?
Neind Kion Nahin Aati..?
Barishon Kay Mousam Mein
Aankh Kion Barrrasti Hai..?
Ashk Kion Nahien Thamtey..?
Barishon Kay Mousam Mein….!

Urdu        اردو

بارشوں کے موسم میں
دل کی سرزمینوں پہ
گرد کیوں بکھرتی ہے۔۔؟
اس طرح کے موسم میں
پھول کیوں نہیں کھلتے۔؟
لوگ کیوں نہیں ملتے۔؟
کیوں فقط یہ تنہائی
ساتھ ساتھ رہتی ہے۔؟
کیوں بچھڑنے والوں کی
یاد ساتھ ساتھ رہتی ہے۔؟
اتنی تیز بارش سے
دل کے آیئنے پر سے
عکس کیوں نہیں دُھلتے۔؟
زخم کیوں نہیں مٹتے۔؟
نیند کیوں نہیں آتی۔؟
بارشوں کے موسم میں
آنکھ کیوں برستی ہے۔؟
اشک کیوں نہیں تھمتے۔؟
بارشوں کے موسم میں۔۔۔۔!

Barish Ki Boondon Nay Jab Dastak Dee Darwazey Par


Roman Urdu    رومن اردو

Baarish Ki Boondon Nay Jab Dastak Dee Darwazey Parr
Mehsoos Hua Tum Aaye Ho Andaz Tumharey Jaisaa Thaa

Hawa Kay Halkay Jhounkay Nay Jabb Bhi Aaht Ki Khidki Par
Mehsoos Hua Tum Challey Ho Andaaz Tumharey Jaisa Thaa

Mein Nay Boondon Ko Apney Hath Par Tapkaya To
Ekk Sard Saa Ehsaas Hua Lams Tumharey Jaisa Thaa

Mein Tanha Challa Jabb Barish Mein Ekk Jhounkay Nay Sath Diya
Mein Samjha Tum Sath Ho Mere Ehsaas Tumharey Jaisa Thaa

Phirr Rukk Gai Wo Barish Bhi, Rahi Nah Baaqi Aaht Bhi
Mein Samjha Tum Chhod Gaye Andaaz Tumharey Jaisa Thaa

Urdu           اردو

بارش کی بوندوں نے جب دستک دی دروازے پر
محسوس ہوا کہ تم آئے ہو انداز تمہارے جیسا تھا

ہوا کے ہلکے جھونکے نے جب بھی آہٹ کی کھڑکی پر
محسوس ہوا تم چلے ہو انداز تمہارے جیسا تھا

میں نے بوندوں کو اپنے ہاتھ پر ٹپکایا تو
اک سرد سا احساس ہوا لمس تمہارے جیسا تھا

میں تنہا چلا بارش میں اک جھونکے نے ساتھ دیا
میں سمجھا تم ساتھ ہو میرے احساس تمہارے جیسا تھا

پھر رک گئی وہ بارش بھی رہی نہ باقی آہٹ بھی
میں سمجھا تم مجھے چھوڑ گئے انداز تمہارے جیسا تھا

Barri Baytaab See Ghari Hai Tere Wissl Ki Shabb


Roman Urdu       رومن اردو

Barri Baytaab See Ghari Hai Tere Wissl Ki Shabb
Nain Se Nain Jo Lardi Hai Tere Wissl Ki Shabb

Palkein Jhapkaney Ki Mohlat Bhi Nahin Dee Tum Nay
Janey Kiss Tarah Sey Guzri Hai Tere Wissl Ki Shabb

Mein Nay Parwaney Kay Jalney Ki Sunni Thee Baatein
Aas Meri Bhi To Jalli Hai Tere Wissl Ki Shabb

Aarzoo Thee Tere Milney Ki Badi Muddat Se
Aik Pall Mein Bikhar Gai Hai Tere Wissl Ki Shab

Lahir Umeed Pe Chorey Thay Apni Naao Ko
Bhanwar e Ishq Mein Phansi Hai Tere Wissl Ki Shabb

Mein Muqeed Raha Zulfaan e Sanam Mein Aisey
Sazaye Qaid Jo Pai Hai Tere Wissl Ki Shabb

Abdul Mutlib Muqeed

Urdu            اردو

بڑی بے تاب سی گھڑی ہے تیرے وصل کی شب
نین سے نین جو لڑی ہے تیرے وصل کی شب

پلکیں جھپکانے کی مہلت بھی نہیں دی تم نے
جانے کس طرح سے گزری  ہے تیرے وصل کی شب

میں نے پروانے کے جلنے کی سنی تھی باتیں
آس میری بھی تو جلی ہے تیرے وصل کی شب

آرزو تھی تیرے ملنے کی بڑی مدت سے
ایک پل میں بکھر گئی ہے تیرے وصل کی شب

لہر امید پہ چھوڑے تھے اپنی ناؤ
بھنور ِ عشق میں پھنسی ہے تیرے وصل کی شب

میں مُقید رہا  زلفانِ صنم میں ایسے
سزائے قید جو پائی ہے تیرے وصل کی شب
عبدالمطلب مقید

Shikast By Ahmed Faraz


Roman Urdu                رومن اردو


Barahaa Mujh Se Dil Nay Kaha Aye Shoobdagar
Tu Keh Alfaaz Sey Asnaamgiri Karta Hai
Kabhi Iss Hussn e Dill Aara Ki Bhi Tasveer Bana
Jo Teri Soch Kay Khakon Mein Lahoo Bharta Hai
Barha Dill Nay Yeh Aawaz Sunni Aor Chaha

Maan Loon Mujh Se Jo Wajdaan Merra Kehta Hai
Laikin Iss Soch Sey Haaraa Merrey Fun Ka Jadu
Chand Ko Chaand Sey Barh Kar Koi Kiya Kehta

Ahmed Faraz

Urdu      اردو

شکست
بارہا مجھ سے دل نے کہا کہ اے شعبدہ گر
تو کہ الفاظ سے اصنام گری کرتا ہے
کبھی اس حسن دل آراء  کی بھی تصویر بنا
جو تیری سوچ کے خاکوں میں لہو بھرتا ہے
بارہا دل نے یہ آواز سنی اور چاہا
مان لوں مجھ سے جو وجدان مرا کہتا ہے
لیکن اس سوچ سے ہارا مرے فن کا جادو
چاند کو چاند سے بڑھ کر کوئی کیا کہتا

احمد فراز

Barhh Hee Jaata Mohabbat Kaa Assar

Roman Urdu   رومن اردو

Barhh Hee Jaata Mohabbat Kaa Assar Shaam Kay Baad
Khali Khali Sey Mujhey Lagtey Hain Gharr Shaam Kay Baad

Tu Bhi Samjhey Keh Mohabbat Ki Azziat Kiya Hai
Kar Meri Tarah Tu Bhi Safar Shaam Kay Baad

Tu Hai Mehtaab To Phir Dil Mein Uttar Raat Gaye
Tu Hai Khursheed To Kuch Dair Thahir Shaam Kay Baad

Aa Kay Baithey Hain Abhi Shaakh Pey Thakk Kar Panchee
Aakhri Jisey Sahara Hoon Shajar Shaam Kay Baad

Jin Pay Hoon Din Mein Kai Rounqein Daikhi Tum Nay
Kitney Sunsaan Sey Lagtey Hain Wo Darr Shaam Kay Baad

Junglon Se Mujhey Aati Hai Sadda Koun Aqeel
Shaakhsaaron Sey Tumhein Aaye Nazar Shaam Kay Baad

Syed Aqeel Shah

Urdu              اردو

بڑھ ہی جاتا محبت کا اثر شام کے بعد
خالی خالی سے مجھے لگتے ہیں گھر شام کے بعد

تُو بھی سمجھے کہ محبت کی اذیت کیا ہے
کر میری طرح کبھی تُو بھی سفر شام کے بعد

تُو ہے مہتاب تو پھر دل میں اُتر رات گئے
تُو ہے خورشید تو کچھ دیر ٹھہر شام کے بعد

آکے بیٹھے ہیں ابھی شاخ پہ تھک کر پنچھی
آخری جیسے سہارا ہوں شجر شام کے بعد

جن پہ ہوں دن میں کئی رونقیں دیکھی تم نے
کتنے سنسان سے لگتے ہیں وہ در شام کے بعد

جنگلوں سے مجھے آتی ہے صدا کون عقیل
شاخساروں سے تمہیں آئے نظر شام کے بعد
سید عقیل شاہ

Tehreerein


Roman Urdu   رومن اردو

Tehreerein
Bahot Sada Say Kaghaz Par
Bahot Sada See Tehreerein
Kabhi Tera Naam Likh Daina
Koi Paighaam Likh Dena
Koi Paighaam Likh Kar Phir
Ussi Ko Choomtey Rehna

Ussey Phir Choom Kar Youn Hee
Zarra Saa Khoon Laykar Phir
Kissi Koney Lagga Dena
Kabhi Khushbu Lagga Daina
Kabhi Rotey Huey Likhna
Inhee Bechain Aankhon Se
Ussi Kaghaz Ki Ekk Janib
Kabhi Aansoo Girra Dena
Kissi Phir Qalam Ko Laykar
Inhee Ashkon Ki Ekk Janib
Koi Chehra Banna Dena
Wohi Aankhein Bana Dena
Kabhi Unn Zeest Kay Lamhon Kay
Ek Ek Waqt Ko Likhna
Kabhi Tareekh Likh Dena
Kabhi Likh Kar Mitta Dena
Kabhi Sookhey Sey Patton Ko
Bhi Kaghaz Par Lagga Dena
Zarra Zarra See Baton Pe
Kai Qissey Sunna Dena
Isharon Se Wo Kuch Likhna
Isharon Se Wo Kuchh Kehna
Kabhi Sub Kuchh Chuppa Laina
Kabhi Sab Kuchh Batta Daena
Phir Aakhir Faisla Karna
Zara Sa Housla Karna
Wo Kaghaz Phard Daina
Ya Ussi Sada Sey Kaghaz Ko
Kabhi Parh Kar Jalla Daina

Syed Aqeel Shah

Urdu    اردو

تحریریں
بہت سادہ سے کاغذ پر
بہت سادہ سی تحریریں
کبھی تیرا نام لکھ دینا
کوئی پیغام لکھ دینا
کوئی پیغام لکھ کر پھر
اُسی کو چومتے رہنا
اُسے پھر چُوم کر یوں ہی
ذرا سا خون لے کر پھر
کسی کونے لگا دینا
کبھی خوشبو لگا دینا
کبھی روتے ہوئے لکھنا
اِنہی بے چین آنکھوں سے
اُسی کاغذ کی اک جانب
کبھی آنسو گرا دینا
کسی پھر قلم کو لے کر
انہی اشکوں کی اک جانب
کوئی چہرہ بنا دینا
وہی آنکھیں بنا دینا
کبھی اُن زیست کے لمحوں کے
اک اک وقت کو لکھنا
کبھی تاریخ لکھ دینا
کبھی لکھ کر مٹا دینا
کبھی سوکھے سے پتوں کو
بھی کاغذ پر لگا دینا
ذرا ذرا سی باتوں پہ
کئی قصے سنا دینا
اشاروں سے وہ کچھ لکھنا
اشاروں سے وہ کچھ کہنا
کبھی سب کچھ چھپالینا
کبھی سب کچھ بتا دینا
پھر آخر فیصلہ کرنا
ذرا سا حوصلہ کرنا
وہ کاغذ پھاڑ دینا
یا اُسی  سادہ سے کاغذ کو
کبھی پڑھ کر جلا دینا

سید عقیل شاہ

Bahot Muddat Se Aisa Hai


Roman Urdu   رومن اردو

Sach
Bahot Muddat Se Aisa Hai
Keh Tum Khamosh Rehtey Ho
Koi Gehra Hai Ghamm Shaid
Jissey Chup Chaap Sehtey Ho
Younhi Chaltey Huey Tanha

Koi Ghamgeen Saa Naghma
Tum Aksar Gungunatey Ho
Douran Guftgu Younhi
Millen Nazron Se Jabb Nazrein
To Batein Bhool Jatey Ho
Kissi Gumsum C Hallt Mein
Yaa Phir Barish Kay Mousam Mein
Faqt Itna Hee Kehtey Ho
Uddasi Be Wajah See Hai
Bahot Bojhal Tabiat Hai
Bhalla Sach Kion Nahien Kehtey
Tumhein Kissi Se Mohabbat Hai

Urdu   اردو

سچ
بہت مدت سے ایسا ہے
کہ تم خاموش رہتے ہو
کوئی گہرا ہے غم شائد
جسے چُپ چاپ سہتے ہو
یونہی چلتے ہوئے  تنہا
کوئی غمگین سا نغمہ
تم اکثر گنگناتے ہو
دوران گفتگو یونہی
ملیں نظروں سے جب نظریں
تو باتیں بھول جاتے ہو
کسی گم سم سی حالت میں
یا پھر بارش کے موسم میں
فقط اتنا ہی کہتے ہو
اُداسی بے وجہ سی ہے
بہت بوجھل طبیعت ہے
بھلا سچ کیوں نہیں کہتے
تمہیں کسی سے محبت ہے

Bahot Likha Mohabbat Peh Magar Samjha Nahien Kuch Bhi

Roman Urdu    رومن اردو

Bahot Likha Mohabbat Peh Magar Samjha Nahien Kuch Bhi
Hazaron Hadsey Aaye Magar Daikha Nahien Kuch Bhi

Yeh Kaisi Dastan Hum Nay Raqam Ki Hai Sarabon Pe
Kahein Alfaaz Roothey Hain Kahein Likha Nahin Kuch Bhi

Hawain Raat Bhar Khirki Sey Khailein Aor Urrey Pattay
Bahot Hee Shore Tha Laikin Yahan Toota Nahien Kuch Bhi

Agar Daikhein Zamaney Mein To Hum Sey Kon Mill Paya
Agar Sochein To Jeewan Bhar Yahan Bichara Nahin Kuch Bhi

Meri Aankhon Mein Thehrey Hain Gullabi Zard Rutt Kay Khawab
Abhi Takk Neind Sey Pochoo Yahan Badla Nahin Kuch Bhi

Koi Ekk Karwan Bhi Tha Pass e Gard e Hawa Laikin
Abhi Daikha To Lagta Hai Yahan Thehra Nahien Kuch Bhi

Aqeel Alfaaz Kay Pehloo Mein Kiss Ki Sans Zinda Hai
Parha Tum Nay Sunna Tum Nay Kabhi Poocha Nahien Kuch Bhi

Syed Aqeel Shah

Urdu    اردو

بہت لکھا محبت پہ مگر سمجھا نہیں کچھ بھی
ہزاروں حادثے آئے مگر دیکھا نہیں کچھ بھی

یہ کیسی داستاں ہم نے رقم کی ہے سرابوں پہ
کہیں الفاظ روٹھے ہیں کہیں لکھا نہیں کچھ بھی

ہوائیں رات بھر کھڑکی سے کھیلیں اور اڑے پتے
بہت ہی شور تھا لیکن یہاں ٹوٹا نہیں کچھ بھی

اگر دیکھیں زمانے میں تو ہم سے کون مل پایا
اگر سوچیں تو جیون بھر یہاں بچھڑا نہیں کچھ بھی

میری آنکھوں میں ٹھہرے ہیں گلابی زرد رُت کے خواب
ابھی تک نیند سے پوچھو یہاں بدلا نہیں کچھ بھی

کوئی اک کارواں بھی تھا پسِ گردِ ہوا لیکن
ابھی دیکھا تو لگتا ہے یہاں ٹھہرا نہیں کچھ بھی

عقیل الفاظ کے پہلو میں کس کی سانس زندہ ہے
پڑھا تم نے سنا تم نے کبھی پوچھا نہیں کچھ بھی

سید عقیل شاہ

Bahot Hee Muddatt Kay Baad Kall Jabb


Roman Urdu    رومن اردو

Bahot Hee Muddatt Kay Baad Kall Jabb
Kitab e Maazi Ko Mein Nay Khola
Bahot Sey Chehrey Nazar Mein Ootrey
Bahot Sey Naamon Peh Dill Paseeja
Ekk Aisa Safha Bhi Iss Mein Aaya

Likha Hua Thaa Jo Aansoon Se
Keh Jiss Ka Unwan “Hum Safar” Tha
Jo Safha Sab Se Hee Mootabir Thaa
Kuchh Aor Aanoos Phir Iss Pe Tapkay
Phir Iss Sey Aagey Mein Parh Nah Paya
Kitab e Maazi Ko Band Kar Kay
Tumhari Yaadon Mein Kho Giya Mein
Agar Tu Milta To Kaisa Hota
Inhee Khiyalon Mein So Giya Mein

Urdu    اردو

بہت ہی مدت کے بعد کل جب
کتابِ ماضی کو میں نے کھولا
بہت سے چہرے نظر میں اترے
بہت سے ناموں پہ دل پسیجا
اک ایسا صفحہ بھی اس میں آیا
لکھا ہوا تھا جو آنسوؤں سے
کہ جس کا عنوان "ہم سفر" تھا
جو صفحہ سب سے ہی معتبر تھا
کچھ اور آنسو پھر اس پہ ٹپکے
پھر اس سے آگے میں پڑھ نہ پایا
کتابِ ماضی کو بندکرکے
تمہاری یادوں میں کھو گیا میں
اگر تُو ملتا تو کیسا ہوتا
انہی خیالوں میں سو گیا میں

DasterKhawan Aug 2013 Urdu Recipe Book

Download Recipe Book in Urdu for Free download
Dastarkhwan Magzeen August 2013 complete free download in pdf.


Download Here


Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...