Friday

Mujh Ko Pana Hai To Mujh Mein Uttar


Roman Urdu   رومن اردو

Mujh Ko Pana Hai To Mujh Mein Uttar Kar Dekho
Youn Kinaron Se Sumandar Ko Daikha Nahin Jata
Urdu   اردو

مجھ کو پانا ہے تو مجھ میں اتر کر یکھو
یوں کناروں سے سمندر کو دیکھا نہیں جاتا

Na Kissi K Aankh Ka Noor Hoon


Roman Urdu   رومن اردو

Na Kissi Kee Aankh Ka Noor Hoon Na Kisi K Dil Ka Qarar Hoon
Kissi Bhi Kaam Mein Jo Aa Na Sakkay Mein Wo Mushtt e Ghubbar Hoon
Urdu   اردو

نہ کسی کی آنکھ کا نور ہوں نہ کسی کے دل کا قرار ہوں
کسی بھی کام میں جو نہ آ سکے میں وہ مشتِ غبار ہوں

Milla To Aor Bhi Taqseem kar Giya


Roman Urdu    رومن اردو

Milla To Aor Bhi Taqseem Kar Giya Mujhko
Sametna Thein Jissey Meri Kirchiyan Mohsin
Urdu   اردو

ملا تو اور بھی تقسیم کر گیا مجھ کو
سمیٹنا تھیں جسے میری کرچیاں محسن

Tuesday

Aaj Kissi Nay Dil Toda To



Roman Urdu   رومن اردو

Aaj Kissi Nay Dil Toda To Hum Ko Jaisey Dhiyan Aaya
Jiss Ka Dil Hm Nay Toda Tha Wo Janey Kaisa Ho Gaa
Urdu   اردو

آج کسی نے دل توڑا تو ہم کو جیسے دھیان آیا
جس کا دل ہم نے توڑا تاھ وہ جانے کیسا ہو گا

Log Ishq Ko Ziwal Kehtey Hain



Roman Urdu   رومن اردو

Log Ishq Ko Ziwal Kehtey Hain
Mein Uss Ziwal K Urooj Pe Hoon
Urdu  اردو

لوگ عشق کو زوال کہتے ہیں
میں اس زوال کے عروج پہ ہوں

Ishq Se Khalwat Mein Kehna


Roman Urdu    رومن اردو

Ishq Se Khalwat Mein Kehna
Ibn e Aadam Pe Zarra Hath Halka Rakhey

Urdu   اردو

عشق سے خلوت میں کہنا
ابنِ آدم پہ ذرا ہاتھ ہلکا رکھے

Nafi Tum Ho Nahi Saktey


Roman Urdu   رومن اردو

Naffi Tum Ho Nahin Saktey Jamma Se Tumko Nafrat Hai
Taqseem Tumko Kartey Hain To Zarab Dil Par Lagti Hai
Urdu    اردو

نفی تم ہو نہیں سکتے جمع سے تم کو نفرت ہے
تقسیم تم کو کرتے ہیں تو ضرب دل پر لگتی ہے

Unhein Bewafa Jo Bolon To


Roman Urdu   رومن اردو

Unhein Bewafa Jo Bolon To Tauheen Hai Wafa Kie
Wo To Wafa Nibha Rahey Hain Kabhi Idher Kabhi Udher
Urdu   اردو

انہیں بے وفا جو بولوں تو توہین ہے وفا کی
وہ تو وفا نبھا رہے ہیں۔۔۔۔۔کبھی ادھر کبھی اُدھر

Yeh Fitrat Yeh Adawatein


Roman Urdu   رومن اردو

Yeh Fitratt Yeh Addawatein Yeh Andaz e Guftagu
Sambhal Jao Tum Tumhin Mohabbat Ho Rahi Hai
Urdu   اردو

یہ فطرت یہ عداوتیں یہ اندازِ گفتگو
سنبھل جاؤ تم تمہیں محبت ہو رہی ہے

Din Raat Musallatt Hai Meri Sochon Pay


Roman Urdu    رومن اردو

Din Raat Musallat Hai Meri Sochon Pe Tera Aks
Tera Halka Saa Tasawaur Mujhe Soney Nahin Deta
Urdu   اردو

دن رات مسلط ہے میری سوچوں پہ تیرا عکس
تیرا ہلکا سا تصور مجھے سونے نہیں دینا

Kon Ujra Hoga Bharri Duniya Mein


Roman Urdu    رومن اردو

Kon Ujjra Ho Gaa Bharri Duniya Mein Hamari Tarah
Tu B Na Milla Hum Ko Aor Khud Ko Bhi Hm Ganwa Baithey
Urdu     اردو

کون اُجڑا ہوگا بھری دنیا میں ہماری طرح
تو بھی نہ ملا ہم کو اور خود کو بھی ہم گنوا بیٹھے

Mumkin Agar Hota


Roman Urdu   رومن اردو

Mumkin Agr Hota Tujhe Hum Aazma Lete
Nahin Hai Housla Hm Mein Dobara Dil Jallaney Kaa
Urdu   اردو

ممکن اگر ہوتا تجھے ہم آزما لینے
نہیں ہے حوصلہ ہم میں دوبارہ دل جلانے کا

Tun Nay Andaz e Muhabbat Dekha Hai


Roman Urdu   رومن اردو

Tu Nay Andaz e Mohabbat Daikha Hai Andaz e Wafa Nahin
Pinjrey Khol B Do To Kuchh Parinday Jaya Nahin Kartey
Urdu    اردو

تو نے اندازِ محبت دیکھا ہے اندازِ وفا نہیں
پنجرے کھو ل بھی دو تو کچھ پرندے جایا نہیں کرتے

Udas Zulmat Ki Raat Mein


Roman Urdu     رومن اردو

Udas Zulmat Ki Raat Mein Jo Sehm Sehm Karr Marr Giya Tha
Sabba Ki Pehli Kirn mein Janey Kaisi Shiddat K Jall Giya Wo
Urdu    اردو

اُداس ظلمت کی رات میں جو سہم سہم کر مر گیا تھا
صبا کی پہلی کرن میں جانے کیسی شدت کہ جل گیا وہ

Wafaat e Ishq Ka Elan Hai


Roman Urdu   رومن اردو

Waffaat e Ishq Ka Elan Hai Kuchh Mashwara Hee Do
Yeh Hindu Tha Na Muslim Tha Jalla Dein Ya Dafna Dein
Urdu  اردو

وفاتِ عشق کا اعلان ہے کچھ مشورہ ہی دو
یہ ہندو تھا نہ مسلم تھا جلا دیں یا دفنا دیں

Sunday

Kai Silsilay Kai Khawab Thay


Roman Urdu      رومن اردو

Kai Silsilay Kahi Khawab Thay
Jo Terri Tallab K Janoon Mein
Merri Dastras Mein Nahin Rahey
Tujhey Chahna Merrey Bass Mein Thaa
So Wohi Hua
Magar Iss K Baad K Marhallay
Keh Guzzarna Jin Se Mahaal Hai
Wo Jo Shab Thee

Tere Wisal Ki
Wo Jo Subeh Thee
Naye Saal Ki
Kahein Kho Gai
Koi Darr Khulla
Na Hawa Challi
Faqt Aik Naqsh e Khiyal Hai
Jissey Hum Nay Rakha Aziz Tar
Magar Ab Wo Naqsh e Khiyal Bhi
Terra Aks e Zuhra Jamal Bhi
Terrey Abraoun K
Bass Ek Isharey Ka Muntazir
Merra Ekk Shakistar Sawal Bhi
Merri Rehguzzar Ka Ghubbar Hai

Urdu   اردو
کئی سلسلے کئی خواب تھے
جو تری طلب کے جنون میں
مری دسترس میں نہیں رہے
تجھے چاہنا مرے بس میں تھا
سو وہی ہوا
مگر اس کے بعد کے مرحلے
کہ گزرنا جن سے محال ہے
وہ جو شب تھی
تیرے وصال کی
وہ جو صبح تھی
ئنے سال کی
کہیں کھو گئی
کوئی در کھلا
نہ ہوا چلی
فقط ایک نقشِ خیال ہے
جسے ہم نے رکھا عزیز تر
مگر اب وہ نقشِ خیال بھی
ترا عکسِ زہرہ جمال بھی
ترے ابروؤں کے
بس اک اشارے کا منتظر
مرا اک شکستہ سوال بھی

مری رہگزر کا غبار ہے

Ekk Tamasha Sa Mujh Mein


Roman Urdu      رومن اردو

Ekk Tamasha Sa Mujh Mein Bappa Reh Giya
Mera Saya Mujhey Dhoondta Reh Giya

Munqasam Youn Hoon Zakhmon Ki Taqseem Se
Chaak Dar Chaak Hoon Kuchh Bacha Reh Giya
Rooh Uss K Taaqub Mein Gum Ho Chukki
Nok Par Jism Ki Sar Dharra Reh Giya

Chhor Kar Chal Diye Sab Merrey Matmi
Aik Mein Aik Dasht e Azza Reh Giya

Mujh Pe Taazeer e Harf e Allam Lag Challi
“Kia Kahon Aor Kehney Ko Kiya Reh Giya”

Jall Giya Apni Aatish Mien Nimrood e Dil
Munkir e Ishq Thaa Sokhta Reh Giya

Mein Nay Likhi Jo Shami Ghazal Rashk Se
Har Sukhanwar Mujhe Dekhta Reh Giya

Hasnain Shami

Urdu   اردو

اک تماشا سا مجھ میں بپا رہ گیا
میرا سایہ مجھے ڈھونڈتا رہ گیا

منقسم یوں ہوں زخموں کی تقسیم سے
چاک در چاک ہوں کچھ بچا رہ گیا

روح اس کے تعاقب میں گم ہو چکی
نوک پر جسم کی سر دھرا رہ گیا

چھوڑ کر چل دیئے سب مرے ماتمی
ایک میں ایک دشتِ عزا رہ گیا

مجھ پہ تعزیرِ حرفِ الم لگ چلی
"کیا کہوں اور کہنے کو کیا رہ گیا"

جل گیا اپنی آتش میں نمرودِ دل
منکرِ عشق تھا سوختہ رہ گیا

میں نے لکھی جو شامی غزل رشک سے
ہر سخن ور مجھے دیکھتا رہ گیا


حسنین شامی

Aakhri Act Reh Giya Baqi


Roman Urdu      رومن اردو

Aakhri Act Reh Giya Baqi
Haal Mein Kursian Laggi Hain Abhi
Log Nazrein Jamaye Baithey Hain
Mein Nay Ye Khail Barha Dekha
Kiya Khabar In Ko Aik Pall Mein Yahan
Sarey Kirdaar Marney Waley Hain
Mein Aadi Hua Hoon Roney Ka
Aakhri Act Reh Giya Baqi
Mein Abhi Kursiyan Uthaaon Gaa

Urdu   اردو

آخری ایکٹ رہ گیا باقی
ہال میں کرسیاں لگی ہیں ابھی
لوگ نظریں جمائے بیٹھے ہیں
میں نے یہ کھیل بارہا دیکھا
کیا خبر ان کو ایک پل میں یہاں
سارے کردار مرنے والے ہیں
میں تو عادی ہوا ہوں رونے کا
آخری ایکٹ رہ گیا باقی
میں ابھی کرسیاں اٹھاؤں گا

قیس علی

Tumhein Jaanan Ijazat Hai


Roman Urdu      رومن اردو

Tumhein Jaanan Ijazat Hai…
Keh In Tareek Rahon Par
Thakan See Khood Mein Pao To
Andheron Se Kabhi Dil Dol Jaye
Thak See Jao To
Merrey Jaltey Huey Lamhon
Merrey Kangal Hathon Se Chhurra K Apney Hath Ko

Fizza Ki Naghmagi Se Tum Naye Geeton Ko Chun Lena
Haseen Palkon Ki Nokon Par Naye Kuch Khawab Bunn Lena
Koi Gar Pooch Lay Mera To Uss Sey Zikkar Nahin Dena
Merrey Jewan Ki Jalti Dopaher Se Begharz Ho Kar
Tum Apni Chandni Raton Mein Jugnu Palti Rehna
Merri Tanhaion Ki Wehshaton Ki Fikkar Matt Karna
Tumhein Ijjazat Hai
Merrey Sab Khatt Jalla Dena
Merrey Tohfon Ko Darya Mein Bahana Ya Dabba Dena
Merri Har Yaad Ko Dill Se Khurachna Aor Mitta Dena
Tumhein Bilkul Ijazat Hai
Magar Bas Itni Guzarish Hai
Agar Aisa Na Ho Jaanaan
To Achha Hai…..!!

Syed Wasi Shah

Urdu   اردو

تمہیں جاناں اجازت ہے
کہ ان تاریک راہوں پر
تھکن سی خود میں پاؤ تو
اندھیروں سے کبھی دل ڈول جائے
تھک سی جاؤ تو
مرے جلتے ہوئے لمحوں
مرے کنگال ہاتھوں سے چھڑا کے اپنے ہاتھ کو
فضا کی نغمگی سے تم نئے گیتوں کو چن لینا
حسیں پلکوں کی نوکوں پر نئے کچھ خواب بُن لینا
کوئی گر پوچھ لے میرا تو اس سے ذکر نہیں دینا
مرے جیون کی جلتی دوپہر سے بے غرض ہو کر
تم اپنی چاندنی راتوں میں جگنو پالتی رہنا
مری تنہائیوں کی وحشتوں کی فکر مت کرنا
تمہیں اجازت ہے
مرے سب خط جلا دینا
مرے تحفوں کو دریا میں بہانا یا دبا دینا
مری ہر یاد کو دل سے کھرچنا اور مٹا دینا
تمہیں بلکل اجازت ہے
مگر بس اتنی گزارش ہے
اگر ایسا نہ ہو جاناں
تو اچھا ہے۔۔۔۔۔

سید وصی شاہ

Abhi Uss Taraf Naa Nigah Kar


Roman Urdu      رومن اردو

Abhi Iss Taraf Na Nigah Kar Mein Ghazal Ki Palkein Sanwar Loon
Merra Lafz Lafz Ho Aaina Tujhe Aainey Mein Uttar Loon

Mein Tamam Din Ka Thakka Hua Tu Tamam Shab Ka Jagga Hua
Zarra Thehr Jaa Issi More Par Terrey Sath Shaam Guzaar Loon

Agar Aasman Ki Numaishon Mein Mujhey B Azzan e Qayam Ho
To Mein Moteon Ki Dukan Sey Terri Baalian Terrey Haar Loon

Kahein Aor Baant Day Shuhratein Kahein Aor Bakhsh Day Izzatein
Merrey Paas Hai Merra Aaina Mein Kabhi Na Gard O Ghubar Loon

Kai Ajnabi Terri Rah Mien Merrey Pass Se Youn Guzar Gaye
Jinhein Daikh Kar Ye Tadp Hui Terra Naam Lay K Pukaar Loon

Dr. Bashir Badar

Urdu   اردو

ابھی اس طرف نہ نگاہ کر میں غزل کی پلکیں سنوار لوں
مرا لفظ لفظ ہو آئینہ تجھے آئینے میں اتار لوں

میں تمام دین کا تھکا ہوا تو تمام شب کا جگا ہوا
ذرا ٹھہر جا اسی موڑ پر ترے ساتھ شام گزار لوں

اگر آسماں کی نمائشوں میں مجھے بھی اذنِ قیام ہو
تو میں موتیوں کی دکان سے تری بالیاں ترے ہار لوں

کہیں اور بانٹ دے شہرتیں کہیں اور بخش دے عزتیں
مرے پاس ہے مرا آئینہ میں کبھی نہ گرد و غبار لوں

کئی اجنبی تری راہ میں مرے پاس سے یوں گزر گئے
جنہیں دیکھ کر یہ تڑپ ہوئی ترا نام لے کے پکار لوں


ڈاکٹر بشیر بدر

Mein To Maqtal Mein Bhi Qismat Ka Sikandar


Roman Urdu      رومن اردو

Mein To Maqtal Mein Bhi Qismat Ka Sikandar Nikla
Qurra e Faal Merrey Naam Ka Aksar Nikla

Tha Jinehin Zo’om Wo Darya B Mujhi Mein Doobey
Mein K Sehra Nazar Aata Thaa Sumandar Nikla

Mein Nay Iss Jaan e Baharan Ko Bahot Yaad Kia
Jab Koi Phool Meri Shaakh e Hunar Par Nikla

Shaher Walon Ki Mohabbat Ka Mien Qail Hoon Magar
Mein Nay Jiss Haath Ko Chooma Wohi Khanjar Nikla

Tu Yahein Haar Giya Hai Merrey Buzdil Dushman
Mujh Se Tanha K Muqabil Terra Lashkar Nikla

Mein Keh Sehraye e Mohabbat Ka Musafir Tha Faraz
Aik Jhonka Tha Keh Khushbu K Safar Par Nikla

Ahmed Faraz

Parveen Shakir

Urdu   اردو

میں تو مقتل میں بھی قسمت کا سکندر نکلا
قرعہ فال مرے نام کا اکثر نکلا

تھا جنہیں زعم وہ دریا بھی مجھی میں ڈوبے
میں کہ صحرا نظر آتا تھا سمندر نکلا

میں نے اس جانِ بہاراں کو بہت یاد کیا
جب کوئی پھول مری شاخِ ہنر پر نکلا

شہر والوں کی محبت کا میں قائل ہوں مگر
میں نے جس ہاتھ کو چوما وہی خنجر نکلا

تو یہیں ہار گیا مرے بزدل دشمن
مجھ سے تنہا کے مقابل ترا لشکر نکلا

میں کہ صحرائے محبت کا مسافر تھا فراز
ایک جھونکا تھا کہ خوشبو کے سفر پر نکلا


احمد فراز

Sab Qareeney Ussi Dildar K Rakh Detey Hain


Roman Urdu      رومن اردو

Sab Qareeney Ussi Dildar K Rakh Dete Hain
Hm Ghazal Mein Bhi Hunar Yaar K Rakh Dete Hain

Shaid Aa Jain Kabhi Chasham e Kharidar Mein Ham
Jaan O Dill Beech Bazaar Mein Rakh Dete Hain

Zikker e Jaanaan Mein Yeh Duniya Ko Kahan Lay Aaye
Log Kion Maslay Bekaar Kay Rakh Dete Hain

Zindagi Teri Amanat Hai Magar….Kia Kijiye
Log Ye Bojh Bhi Thak Haar K Rakh Dete Hain

Hum To Chahat Mein B Ghalib K Muqallad Hain Faraz
Jis Pe Martey Hain Ussey Maar K Rakh Dete Hain

Ahmed Faraz

Urdu   اردو

سب قرینے اُسی دلدار کے رکھ دیتے ہیں
ہم غزل میں بھی ہنر یار کے رکھ دیتے ہیں

شاید آ جائیں کبھی چشمِ خریدار میں ہم
جان و دل بیچ کے بازار میں رکھ دیتے ہیں

ذکرِ جاناں میں یہ دنیا کو کہاں لے آئے
لوگ کیوں مسئلے بیکار کے رکھ دیتے ہیں

زندگی تیری امانت ہے مگر۔۔۔۔۔۔۔۔کیا کیجیئے
لوگ یہ بوجھ بھی تھک ہار کے رکھ دیتے ہیں

ہم تو چاہت میں بھی غالب کے مقلد ہیں فراز
جس پر مرتے ہیں اُسے مار کے رکھ دیتے ہیں


احمد فراز

Ishq Ho Jaye Barbad


Roman Urdu   رومن اردو

Yeh Ishq Ho Jaye Barrbaad..!!
Aaj Mazar Par Diya Jalla Kar Aaya Hoon
Urdu   اردو

یہ عشق ہو جائے برباد۔۔۔
آج مزار پر دیا جلا کر آیا ہون
Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...